وکرم شیلا ایکسپریس میں دو عالم دین پر شرپسندوں کا شدید حملہ، جے شری رام کے نعرے لگارہے تھے حملہ آور

بھاگلپور: (ملت ٹائمز / اشفاق صدیقی )
دہلی سے بھاگلپو ر جانے والی ٹرین وکرم شیلا ایکسپریس میں دو عالم دین پر شرپسندوں کی جانب سے مارپیٹ کا معاملہ سامنے آیا ہے ۔ملت ٹائمز کو ملی اطلاع کے مطابق دہلی کے آنند وہار سے جب 6 دسمبر کو جب ٹرین چلی تو اس کوچ میں موجود ایک شخص نے مولانا طاہر سے سے برتھ تبادلہ کرنے کامطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ اپر برتھ سے آپ اپنے لور برتھ کا تبادلہ کرلو مولانا طاہر ایسا کرنے سے یہ کہتے ہوئےانکار کردیا کہ ہم ایک سیٹ پر دو آدمی ہیں اپر برتھ پر ہمیں پریشانی ہوگی۔
مولانا طاہر نے ملت ٹائمز سے فون پر بات کرتے ہوئےبتایا کہ بھاگلپور کے قریب ایک اسٹیشن پر مذکورہ شخص نے چار پانچ آدمی کا گروپ بناکر حملہ کردیا اور ہاتھ پاوں جوتا چپل سے مارنا شروع کردیا درمیان میں ایک دو لوگ جو مارنے آئے انہیں بھی مارا ۔مولانا نے مزید بتایا کہ حملہ کے دوران وہ لوگ جے شری رام کے نعرے بھی لگارہے تھے اور یہ کہ رہے تھے کہ تم میاں کو یہیں پر قتل کرکے رکھ دیں گے کسی کو آگے نہیں جانے دیں کوئی تم لوگوں کو نہیں بچا سکتا ہے ۔مولانا طاہر نے یہ بھی بتایا کہ ان کے ساتھ سفر کررہے مولانا یاسین صدیقی کو بھی شدید چوٹیں آئی ہیں ۔اس کے علاوہ ایک غیر مسلم اشوک پر حملہ کیا گیا جب اس نے بچانے کی کوشش ۔مارپیٹ کے دوران ایک شخص نے ویڈیو بنانے میں کامیابیحاصل کرلی جس میں مارتے ہوئے صاف دیکھا جارہا ہے ۔
رپوٹ لکھے جانے تک اس معاملے کی ایف آئی آر درج نہیں ہوسکی تاہم مولانا طاہر اور مولانا یاسین اس کاروائی میں لگے ہوئے ہیں ۔
واضح رہے کہ گذشتہ تین ماہ کے دوران ریلوے میں مار پیٹ کا یہ چوتھا حملہ ہے۔

Related posts

Leave a Reply

Your email address will not be published.