اسلام 2040 میں امریکہ کا دوسرا بڑا مذہب بن جائے گا:رپوٹ

واشنگٹن۔12جنوری(ملت ٹائمزایجنسیاں)
امریکہ میں مسلمان آئندہ2 عشروں کے دوران میں دوسرا بڑی مذہبی گروپ بن جائیں گے اور اسلام اس ملک کا دوسرا بڑا مذہب ہوگا۔
اس بات کا دعویٰ امریکی ٹی وی نے ایک رپورٹ میں کیا اور یہ پیو ریسرچ کے ایک مطالعے پر مبنی ہے۔رپورٹ کے مطابق امریکا میں مسلمان آباد ی بڑی تیزی سے پھیل رہی ہے اور یہ ایک تخمینے کے مطابق آئندہ3 عشروں میں دوگنا سے بھی بڑھ سے جائے گی۔اس میں بتایا گیا ہے کہ
2007 میں امریکا میں مسلمانوں کی آبادی قریباً ساڑھے 34لاکھ تھی۔2050ء میں یہ بڑھ کر 81 لاکھ ہوجائے گی جبکہ اس عرصے کے دوران میں مسلمانوں کی تعداد یہود سے بڑھ جائے گی اور وہ عیسائیوں کے بعد دوسرا بڑا مذہبی گروپ بن جائیں گے۔پیو نے 2007ء، 2011ءاور 2017 میں مذہب کی بنیاد پر امریکا میں مقیم لوگوں کی تعداد سے متعلق اپنے مطالعات کو یک جا کیا ہے اور ان مطالعات کی ایک مشترکہ رپورٹ جاری کی ہے۔
تاہم رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ آئندہ چند عشروں میں مسلمانوں کی تعداد تو ضرور دوگنی ہوجائے گی لیکن کل ملکی آبادی میں ان کی تعداد بہت تھوڑی ہی ہوگی۔نیز عیسائیوں کی آبادی امریکا میں پہلے نمبر پر ہی رہے گی۔ان کے بعد لامذہبوں کی تعداد سب سے زیادہ ہے۔یعنی وہ لوگ جو سرے سے کسی دین کو مانتے ہی نہیں ہیں۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *