ضمنی انتخابات میں بی جے پی کو بدترین شکست کا سامنا ،یوپی میں چلی سائیکل ،بہار میں لالٹین نے بکھیری روشنی

پٹنہ۔14مارچ(ملت ٹائمز)
بہارمیں جہان آباد اسمبلی حلقہ سے اصل اپوزیشن پارٹی راشٹریہ جنتادل کے امیدوار کمارکرشن موہن عرف سودے یادو اور بھبھوا اسمبلی سیٹ سے حکمراں بھارتیہ جنتاپارٹی (بی جے پی )امیدوار رنکی رانی منتخب قراردی گئی ہیں۔ادھر ارریہ لوک سبھا سیٹ پر بھی آر جے ڈی کے امیدوار جیت گئے ہیں۔ سرفراز عالم نے اپنی حریف کو 57358 ووٹوں کے بڑے فرق سے ہرادیا ہے۔
ریاستی انتخابی دفتر کے مطابق آرجے ڈی کے سودے یادو نے جنتادل یو کے ابھیرام شرما کو 35036ووٹوں کے فرق سے شکست دی۔آر جے ڈی نے اس سیٹ پر اپنا قبضہ برقراررکھاہے۔وہیں بھبھوا سے بی جے پی کی رنکی رانی پانڈے نے کانگریس کے شنبھو پٹیل کو تقریبا16ہزار ووٹوں سے ہرایا۔اس سیٹ پر بی جے پی نے اپنا قبضہ برقراررکھا ہے۔
واضح رہے کہ مسٹر یادو کے والد مندریکا سنگھ یادو کے انتقال کی وجہ سے خالی ہوئی جہان آباد سیٹ اور محترمہ پانڈے کے شوہر آنند بھوشن پانڈے کے انتقال کی وجہ سے خالی ہوئی بھبھواسیٹ کے لئے 11مارچ کو ضمنی انتخاب کرائے گئے تھے ۔
اترپردیش کے ضمنی انتخابات میں سماجوادی پارٹی کے سربراہ اکھلیش یادو اور بی ایس پی سپریمو مایا وتی کی جوڑی حکمراں بی جے پی پر بھارتی پڑگئی ہے۔ جہاں وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ اپنی گڑھ مانی جانے والی گورکھپور سیٹ کو بھی نہیں بچاپائے ، وہیں نائب وزیر اعلی کیشو پرساد موریہ کی پھولپور سیٹ بھی بی جے پی سے چھن گئی ہے۔ دونوں سیٹوں پر سماجوادی پارٹی کے امیدواروں نے کامیابی حاصل کی ہے۔
اترپردیش کی گورکھپور سیٹ پرسماجوادی پارٹی کے امیدوار پروین نشاد اب 21 ہزار سے زئد ووٹوں سے بی جے پی امیدوار کو شکست دی۔ ادھرپھولپور میں بھی سماجوادی پارٹی کے امیدوار ناگیندر سنگھ پٹیل نے بی جے پی کے امیدوار کو 59613 ووٹوں کے بڑے فرق سے ہرادیا ہے۔
یوپی کی ان دونوں نشستوں پر بی جے پی کے ساتھ ساتھ وزیراعلی یوگی آدتیہ ناتھ کا وقار داﺅ پر لگا ہوا تھا۔کیونکہ وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ تقریبا 20 سالوں پر گورکھپور سے لگاتار کامیاب ہو تے رہے ہیں اور اس سیٹ پر بی جے پی کی جیت تقریبا طے مانی جارہی تھی۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *