کیس واپس لینے کے بجائے پتھر بازوں کو گولی مار دینی چاہیے: بی جے پی ایم پی کا متنازع بیان

سری نگر:بی جے پی کے راجیہ سبھا ایم پی ڈی پی وتس نے پتھر بازوں کو لے کر ایک متنازع بیان دیا ہے۔ نیوز ایجنسی اے این آئی کے مطابق، بی جے پی رکن پارلیمنٹ نے کہا ہے کہ کشمیر میں پتھربازوں کے کیس کو واپس لینے کی بجائے انہیں گولی مار دی جانی چاہئے۔
نیوز ایجنسی اے این آئی کے مطابق ہفتہ کو ڈی پی وتس نے کہا، میں نے اخبارات میں کشمیر میں پتھربازوں پر درج کیس واپس لئے جانے کے بارے میں ڈھنگ سے نہیں پڑھا، لیکن مجھے لگتا ہے کہ پتھربازوں کو گولی مار دینی چاہئے۔”ڈی پی وتس کا بیان وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کے اس بیان کے بعد آیا جس میں انہوں نے (راجناتھ سنگھ) پہلی بار پتھر بازی کرنے والوں کا کیس واپس لیتے ہوئے اسے ‘بچوں کی غلطی’ قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ ان کے مستقبل کو خطرے میں نہیں ڈالا جا سکتا۔
کشمیر دورے پر پہنچے راج ناتھ سنگھ نے جمعرات کو کہا تھا، “ہم نے پہلی بار پتھر بازی میں شامل 10 ہزار بچوں پر درج کیس واپس لینے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ ان کا مستقبل خطرے میں نہ پڑے۔”

واضح رہے کہ گزشتہ ہی ہفتے مرکزی حکومت نے قومی انسانی حقوق کمیشن سے کہا تھا کہ جموں کشمیر حکومت کی طرف سے پتھر بازی کرنے والوں کے خلاف درج کیس واپس لینے سے جہاں سیکورٹی فورسز کا حوصلہ کم ہوگا، وہیں دہشت گرد اپنی سرگرمیوں میں عام لوگوں کے استعمال کے لئے حوصلہ افزا ہوں گے۔
مرکز نے کہا تھا کہ یہ ریاستی حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ مسلح افواج کے انسانی حقوق کی حفاظت کے لئے پتھربازوں اور مشتعل عناصر کے خلاف کڑی کارروائی کرے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *