دنیا کے 21 سربراہان مملکت کی موجودگی میں طیب اردگان کی حلف برداری ،نئے صدارتی نظام میں ترکی کو ترقی کے ساتویں آسمان پر پہونچانے کا عزم

میں صرف ان لوگوں کا صدر نہیں ہوں جنہوں نے مجھے ووٹ دیا تھا بلکہ ترکی کی 81 ملین آباد ی کا بلاتفریق صدر ہوں ۔نئے نظام کے بعد ہم مزید ترقی کریں گے اور ہمارا ملک دنیا کے اہم ترین ممالک کی فہرست میں نمایاں ہوگا ۔
انقرہ (ملت ٹائمز)
رجب طیب اردگان نے گذشتہ کل ترکی کے نئے صدارتی نظام کے تحت پہلے صدر کی حیثیت سے حلف لے لیاہے ۔راجدھانی انقرہ میں واقع صدارتی محل میں حلف برداری کی یہ تقریب منعقد کی گئی جس میں پاکستان ،زامبیا ،بوسینیا ،صومالیہ اور سوڈان سمیت کل 21 ممالک کے صدور نے شرکت کی ،اس کے علاوہ متعدد ممالک کے اہم ذمہ دار بھی اس تقریب میں موجود تھے ۔
حلف برداری تقریب سے خطا ب کرتے ہوئے اردگان نے کہاکہ میں صرف ان لوگوں کا صدر نہیں ہوں جنہوں نے مجھے ووٹ دیا تھا بلکہ ترکی کی 81 ملین آباد ی کا بلاتفریق صدر ہوں ۔نئے نظام کے بعد ہم مزید ترقی کریں گے اور ہمارا ملک دنیا کے اہم ترین ممالک کی فہرست میں نمایاں ہوگا ۔ آج ترکی میں صدر ایک نئے نظام کی بحالی نہیں ہوئی بلکہ 95 سالہ قدیم نظام کا خاتمہ ہوا ہے جس کی ہمیں سیاسی ،سماجی اور اقتصادی میدان میں قیمت چکانی پڑی رہی تھی۔

واضح رہے کہ 24 جون کو ترکی میں صدارتی وپارلیمانی انتخابات منعقد ہواتھاجس میں طیب اردگان نے 53 فیصد ووٹ حاصل کرکے شاندار جیت حاصل کی ،ان کی آق پارٹی کو بھی سب سے زیادہ ووٹ ملے ۔ترک میڈیا کے مطابق ترکی میں نئے صدارتی نظام پرعمل درآمد شروع ہوگیا ہے اور سولہ رکنی نئی کابینہ کا اعلان کردیا گیاہے ۔نئے صدارتی نظام کے تحت نئے نائب صدور اور وزراء کے ناموں کا اعلان کردیا گیا ہے۔کابینہ میں جن ناموں کو شامل کیا گیا ہے وہ کچھ یوں ہیں۔
صدر ایردوان کے دستِ راست اور نائب صدر: فواد اوکتائے
وزیر انصاف: عبدالحمید گل
وزیر داخلہ: سیلمان سوئیلو
وزیر قومی دفاع: حلوصی آقار
وزیر قومی تعلیم : ضیاءسلچوق
وزیر صحت: فخر الدین کوجہ
وزیر توانائی اور قدرتی وسائل :فاتح دونمیز
وزیر ماحولیات اور شہری امور: مرات ک±رم
وزیر ثقافت و ٹورازم : مہمت ایرسوئے
یوتھ اور کھیلوں کے امورکے وزیر: مہمت قصاپ اولو
وزیر خزانہ اور مالی امور: بیرات آلبائراک
ووزیر مواصلات اور انفرا سٹرکچر : مہمت چاہیت طوران
وزیر خارجہ: مولود چاوش اولو
وزیر محنت ، سماجی خدمات اور عائلی امور : زہرہ زمرت
وزیر ذراعت و جنگلات: بیکر پاکدیمیرلی
وزیر صنعت و ٹکنولوجی : مصطفےٰ وارانک
وزیر تجارت :روحسار پیکجان

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *