مودی حکومت نے اپنی تشہیر پر خرچ کردیئے 5 ہزار کروڑ روپے ،یوپی اے حکومت میں دس سالوں کے دوران ہواتھا اس کا نصف

منموہن سنگھ کی قیادت والی یو پی اے حکومت نے اپنے دس سالہ دور اقتدار میں تشہیر پر کل 2,658 کروڑ روپے خرچ کئے جبکہ مودی حکومت نے اب تک محض ساڑھے چار سال میں 5ہزار کروڑ روپے خرچ کر دئے ہیں۔

نئی دہلی (ایم این این )
منموہن سنگھ کی قیادت والی یو پی اے حکومت نے اپنے دس سالہ دور اقتدار میں تشہیر پر کل 2,658 کروڑ روپے خرچ کئے جبکہ مودی حکومت نے اب تک محض ساڑھے چار سال میں 5ہزار کروڑ روپے خرچ کر دئے ہیں۔
ایک آر ٹی آئی کے جواب سے انکشاف ہوا ہے کہ وزیر اعظم کی قیادت والی مودی حکومت نے اب تک اشتہار اور پبلی سٹی پر تقریبا 5 ہزار کروڑ روپے خرچ کر دئے ہیں۔نوئیڈا کے رہنے والے آر ٹی آئی کارکن رامویر تنور نے وزارت برائے اطلاعات و نشریات سے تفصیلات مانگی تھیں کہ مودی حکومت نے سال 2014 سے اب تک حکومت کی تشہیر پر مختلف ذرائع سے کتنی رقم خرچ کی ہے۔اس آر ٹی آئی کے جواب سے پتہ لگا ہے کہ مودی حکومت نے الیکٹرانک میڈیا کے ذریعہ کی گئی تشہیر پر 2208 کروڑ روپے خرچ کئے ہیں جو اب تک کی سب سے زیادہ ہے۔ پرنٹ میڈیا میں خرچ ہونے والی رقم دوسرے نمبر پر آتی ہے۔

راجیہ وردھن سنگھ راٹھور کی وزارت برائے اطلاعات و نشریات نے آر ٹی آئی کے جواب میں بتایا کہ مودی حکومت نے سال 2018 کے اگست ماہ تک پرنٹ میڈیا میں دئے گئے اشتہاروں پر 2136 کروڑ روپے خرچ کئے۔آر ٹی آئی جواب میں بتایا گیا کہ مودی حکومت نے آوٹ ڈور پبلی سٹی یعنی بل بورڈ، بس اور بینچوں وغیرہ پر ہونے والی تشہیر پر 647 کروڑ روپے خرچ کئے ہیں۔آوٹ ڈور پبلی سٹی کے معاملہ میں مہیش شرما کی وزارت سیاحت نے گزشتہ چار سالوں میں سب سے زیادہ پیسہ خرچ کیا۔ سرکاری ریکارڈس کے مطابق وزارت سیاحت نے سال 2014-2015 میں 11 کروڑ روپے، سال 2015-2016 میں 14 کروڑ روپے اور سال 2017-2018 میں 5 کروڑ روپے خرچ کئے۔اسی طرح محکمہ امور صارفین نے اکیلے سال 2014–2015 میں آوٹ ڈور پبلی سٹی پر 14 کروڑ روپے خرچ کئے ہیں۔ سال2017-2018 کے دوران محکمہ نے آویٹ ڈور پبلی سٹی پر 17 کروڑ روپے خرچ کئے ہیں۔واضح رہے کہ مودی حکومت نے اپنی تشہیر پر اس کا دو گنا خرچ کیا ہے جو منموہن سنگھ کی قیادت والی یو پی اے حکومت نے اپنے دس سالہ دور اقتدار میں کیا تھا۔

ملت ٹائمز ایک آزاد،غیر منافع بخش ادارہ ہے جس کی آمدنی کا کوئی ذریعہ نہیں۔اسے جاری رکھنے کیلئے مالی مدد درکارہے۔یہاں کلک کرکے تعاون کریں
Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *