حکومت کو ہماری آواز سننی ہی ہوگی : آمنہ روشی دیوبند عیدگاہ میں شدید بارش اور تیز ہواؤں کے باوجود خواتین کا احتجاج جاری ! 

10

دیوبند: (سمیر چودھری) شہریت ترمیمی قانون کے خلاف متحدہ خواتین کمیٹی کی جانب سے دیوبند کے عیدگاہ میدان میں جاری خواتین کا احتجاج شدید بارش، سردی اور تیز ہواؤں کے باوجود بدستور جاری ہے،حالانکہ یہاں گزشتہ دو دنوں سے مسلسل آندھی طوفان اور بارش ہورہی ہے مگر خواتین کے حوصلے بلند ہیں،اتنا ہی نہیں بلکہ احتجاج میں رضاکارانہ ذمہ داریاں انجام دے رہے نوجوان عیدگاہ میدان سے پانی نکالنے میں اور پورے گراؤنڈ کو صاف ستھران کرنے میں لگے ہیں۔ متحدہ خواتین کمیٹی کی صدر آمنہ روشی نے کہاکہ سخت موسم کے باوجود ہمارے حوصلے پست نہیں ہیں، ہم جس لڑائی کے لئے گھروں سے نکلے تھے جب تک وہ مکمل نہیں ہوگی اس وقت تک ہمارا دھرنا جاری رہے گا، انہوں نے کہاکہ شدید سردی، موسم کی سختیا،بارش اور آندھی طوفان کے باوجود دیوبند کی خواتین گزشتہ ڈیڑھ ماہ سے عیدگا میدان میں حکومت وقت کے غلط فیصلوں اور آئین کے تحفظ کے لئے احتجاج کررہی ہیں، انہوںنے کہاکہ یہ حکومت سی اے اے ،این آرسی اور این پی جیسے فیصلوں سے عوام کو ڈرانا چاہتی ہے اور لوگوں کی شہریت کو مشکوک کرنا چاہتی ہے لیکن ہم بتادینا چاہتے ہیں یہ ملک ہمارا ہے، ہمارے آباؤ واجداد نے اس ملک کو اپنے خون سے سینچا ،حکومت وقت اپنی تعصبی ذہنیت کے سبب ملک کی دوسری بڑی آباد کو الگ تھلگ کردینا چاہتی ہے،مگر اس کی یہ ناپاک سازش کبھی پوری نہیں ہوگی ،کیونکہ یہ لڑائی کسی ایک طبقہ اور فرقہ کی نہیں بلکہ جمہوریت میں یقین رکھنے والے ہرفرد کی لڑائی ہے۔