حلال و حرام کی بحث مسلمانوں کو دنیا سے الگ کرنے کی سازش : مفتی منظور ضیائی

حلال و حرام کی بحث مسلمانوں کو دنیا سے الگ کرنے کی سازش : مفتی منظور ضیائی

مفتی منظور ضیائی نے ان خبروں پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے جس میں مذہب کے حوالے سے کورونا ویکسین کے حرام یا حلال ہونے پر بحث کی گئی ہے اور مسلمانوں کوباقی دنیا سے الگ دکھانے کی کوشش کی گئی ۔

مذہب کے حوالے سے کورونا ویکسین کے حرام یا حلال ہونے پر جو بحث کی جا رہی ہے وہ مسلمانوں کو باقی دنیا سے الگ تھلگ کرنے کی ایک سازش ہے جسے مسلمانوں کو سمجھنے کی ضرورت ہے ۔

کورونا ویکسین کے استعمال پر درست یا نا درست کی بحث میں اپنے خیالات رکھتے ہوئے نامور عالم دین مفتی منظور ضیائی نے ان خبروں پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے جس میں مذہب کے حوالے سے کورونا ویکسین کے حرام یا حلال ہونے پر بحث کی گئی ہے اور مسلمانوں کوباقی دنیا سے الگ دکھانے کی کوشش کی گئی ۔

مفتی منظور ضیائی نے کہا کہ ابھی یہ معاملہ انڈونیشیا سے اٹھایا گیا ہے اور میڈیا میں اس بات کو لیکر تجسس پایا جا رہا ہے کہ علمائے کرام کی اس معاملہ میں کیا رائے ہے ۔مفتی ضیائی نے کہا کہ اُن سے میڈیا کے لوگوں نے اس موضوع پر مختلف سوالات کئے ہیں ۔

جہاں تک ان کا ذاتی موقف ہے وہ اس بات کے حق میں ہیں کہ جان بچانے اور کورونا جیسے مضر مرض سے نجات پانے کیلئے کورونا ویکسین کا استعمال بلاقراحت جائز ہے ۔

مفتی ضیائی نے کہا کہ بین الاقوامی دوا ساز کمپنیوں pfizer,moderna or AstraZeneca نے اس بات کی وضاحت کی ہے کہ اُن کے ذریعے تیار کی گئی ویکسین میں خنجیر کے اعضا کی آمیزش نہیں ہے –

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *