تمام قومیں عقیدہ و فکر کے اختلاف کے باوجود مسلمانوں کے خلاف متحد: مولانا حلیم اللہ قاسمی

تمام قومیں عقیدہ و فکر کے اختلاف کے باوجود مسلمانوں کے خلاف متحد: مولانا حلیم اللہ قاسمی

ممبئی: دنیا کی تمام قومیں اپنے لاکھ آپسی اختلاف کے باوجود مسلمانوں کے خلاف متحد و متفق ہیں۔ دنیا کی ایسی دو قومیں جن کے درمیان مذہبی اعتبار سے بہت دوری ہے۔ لیکن یہ بھی مسلمانوں کے خلاف متحد و متفق ہیں۔ایسے حالات میں علماء کرام کی ذمہ داریاں عوام کی بنسبت زیادہ ہو جاتی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار مولانا حلیم اللہ قاسمی جنرل سکریٹری جمعیۃ علماء مہاراشٹر نے دھولیہ میں منعقدہ اجلاس بعنوان ”مسلم معاشرے کے سلگتے ہوئے مسائل“ میں کیا۔

مولانا حلیم اللہ قاسمی نے فرمایا کہ دنیا کی محبت نے ہماری آنکھوں پر پردہ ڈال رکھا ہے۔ہمارا معاشرہ جنگلی درندوں اور جانوروں کی طرح ہوگیا ہے، ہم اپنے مفاد کے لئے سب کچھ کر گزرتے ہیں۔ہمیں معاشرہ کی تباہی کی کوئی فکر نہیں۔کسی کے سر کی چادر کے چھن جانے کی پرواہ نہیں،کسی کے یتیم یا بیوہ ہونے کی فکر نہیں،ہم کو صرف اپنی دنیا عزیز ہے، اپنامفاد عزیز ہے۔
مولانا نے مزید کہا کہ ملک کے حالات اب ایسے بن گئے ہیں کہ راستہ چلتے آپ کو پکڑ لیا جائے گا اور مختلف دفعات لگادی جائے گی،اور آپ یاآپ کے متعلقین کچھ بھی نہیں کرپائیں گے۔اس لئے ہمیں حفاظت خود اختیار ی کا پروگرام بنانا ہوگا، ترتیب بنانی ہوگی، لائحہ عمل طے کرنا ہوگا۔
مولانا نے یہ بھی فرمایا کہ عادت اللہ ہے کہ جو زیادہ مقرب ہوتا ہے اس کا امتحان اور آزمائش بھی اتنی ہی زیادہ سخت ہوتی ہے،ہر زمانے کے علماء نے امت کی اصلاح کے لئے قربانیاں دی ہیں۔فی الوقت ہندوستان میں بھی یہ امت ہر طرح کے داخلی و خارجی آزمائش سے گزر رہی ہے۔دین کی خدمت کے ساتھ معاشرے کے مسائل اور سارے چیلنجوں کا بھی مقابلہ کرنا آخری نبی کے امتی ہونے کے ناطے اب یہ ہماری ذمہ داری ہے۔
اجلاس کا آغاز مولوی محمد شعیب حنیف صاحب قاسمی کی تلاوت کلام پاک اورمولوی محمد خالد کی نعت رسول ﷺ سے ہوا۔اجلاس کی صدارت مولانا ضیاء الرحمٰن صاحب قاسمی صدر جمعیۃعلماء شہر دھولیہ نے فرمائی۔
اجلاس کے اغراض و مقاصدکو مولانا ہلال احمد صاحب قاسمی نے بیان فرمایا۔بعدہ ناظم تنظیم جمعیۃعلماء مہاراشٹر حضرت مفتی حفیظ اللہ قاسمی صاحب نے مختصر وقت میں نہایت قیمتی اور اثر انگیز خطاب فرمایا۔
مفسر قرآن،شیخ الحدیث مدرسہ سراج العلوم دھولیہ مولانا مختار احمد مدنی نے رقت انگیز دعا فرمائی اور محمد یوسف پاپا سر نے تمام ہی معزز مہمانان کا شکریہ ادا کیا۔
مولانا حلیم اللہ قاسمی جنرل سکریٹری جمعیۃ علماء مہاراشٹر، مفتی حفیظ اللہ صاحب ناظم تنظیم جمعیۃعلماء مہاراشٹر و ناظم تعلیمات مدرسہ سراج العلوم بھیونڈی، حافظ محمد عارف انصاری صاحب صدر جمعیۃ علماء شہر تھانے اور حافظ نور الدین ابن مولانا حلیم اللہ صاحبان کی خدمت میں دھولیہ جمعیۃ علماء کی جانب سے خصوصی استقبالیہ پیش کیا گیا۔
اجلاس میں شہر دھولیہ، مالیگاؤں،نندوربار، شہادہ، سونگیر اور دیگر علاقوں کے معزز علماء،مفتیان و ائمہ مساجد کے علاوہ وابستگان جمعیۃ علماء نے کثیر تعداد میں شرکت کی،جبکہ مہمانان خصوصی کے طور پر مولانا مختار احمد مدنی شیخ الحدیث مدرسہ سراج العلوم،دھولیہ، مفتی محمد قاسم جیلانی مہتمم مدرسہ فلاح دارین و صدر جمعیۃ علماء دھولیہ، مولانا عبد القیوم صاحب قاسمی (مالیگاؤں) مولانا شعیب احمدصاحب استاد حدیث مدرسہ سراج العلوم دھولیہ، مولانا مشتاق احمد نائب مہتمم مدرسہ قمر الزماں دھولیہ، قاضی انیس الرحمٰن قاسمی دار القضاء ضلع دھولیہ و نندورباروغیرہ بھی شریک ہوئے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *