کھیل شروع: امت شاہ جنوری میں ’سی اے اے‘ کے نفاذ کا اعلان کریں گے!

کھیل شروع: امت شاہ جنوری میں ’سی اے اے‘ کے نفاذ کا اعلان کریں گے!

مرکزی وزیر داخلہ 19 یا 20 جنوری کو مغربی بنگال آئیں گے اور وہ ٹھاکر نگر جائیں گےجہاں وہ رفیوجی کمیونیٹی سے خطاب کریں گے۔

بنگال دورے کے دوران شہریت ترمیمی ایکٹ یعنی CAA پر خاموشی کے بعد وزیر داخلہ امت شاہ کی نیت پر اٹھ رہے سوالات کے درمیان آج بی جے پی نے کہا ہے کہ اگلے مہینے جنوری میں جب مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ بنگال کا دورہ کریں گے تو وہ بنگال میں شہریت ترمیمی ایکٹ کے نفاذ کا اعلان کریں گے اور اس طریقے سے’ متوا سماج ‘کے مدتوں کا خواب پورا ہوگا ۔
بی جے پی کی جانب منعقد پریس کانفرنس میں یہ اعلان کیا گیا ۔اس موقع پر بی جے پی کے قومی نائب صدر مکل رائے، راجیہ سبھا کے رکن پارلیمنٹ سواپن داس گپتا اور ممبر پارلیمنٹ شانتو ٹھاکر موجود تھے۔ٹھاکر جن کاتعلق متوا سماج سے ہے نے شہریت ترمیمی ایکٹ کے نفاذ میں تاخیر پر ناراضگی ظاہر کی تھی ۔
بی جے پی کے ذرائع کے مطابق امت شاہ متواسماج کے گڑھ ٹھاکر نگر جائیں گے اور وہاں شہریت ترمیمی ایکٹ کے نفاذ کا اعلان کریں گے ۔حالیہ دورے کے دوران امت شاہ نے کہا تھا کہ کورونا وائرس کی وجہ سے شہریت ترمیمی ایکٹ کے نفاذ میں تاخیر ہورہی ہے ۔اس کے بعد سے ہی متوا سماج میں ناراضگی پھیل گئی تھی ۔
بی جے پی کے ممبر پارلیمنٹ شانتو ٹھاکر نے اس پرناراضگی ظاہر کی تھی۔بی جے پی نے انہیں منایا ہے اور آج پریس کانفرنس کے ذریعہ یہ پیغام دینے کی کوشش کی ہے ۔ٹھاکر نے کہا ہےکہ مرکزی وزیر داخلہ 19 یا 20 جنوری کومغربی بنگال آئیں گےاور وہ ٹھاکرنگر جائیں گے۔ وہ رفیوجی کمیونیٹی سے خطاب کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ جب ہم نے اس قانون کو پاس کیا ہے تو اس کو نافذ کیوں نہیں کریں گے۔اب خود امت شاہ متوا سماج سے ملاقات کرکے ان کے خدشات کو دور کریں گے۔
نائب صدر مکل رائے نے کہا کہ متوا برادری کاسیاسی استحصال کیا گیا ہے ۔ترنمول کانگریس اور بائیں محاذ نے اپنے فائدے کےلئے ان کا استعمال کیا ہے ۔ کبھی بھی متواج سماج کی بھلائی کےلئے کام نہیں کیا ہے ۔
بنگال میں سی پی آئی (ایم) اور ترنمول کانگریس نے مسلم دراندانوں کو فائدہ پہنچایا ہے ۔گزشتہ دس سالوں میں ممتا بنرجی نے متواج سماج کےلئے کوئی کام نہیں کیا ہے ۔مکل رائے نے کہا کہ بی جے پی کی قیادت والی مرکزی حکومت نے متوا سماج کو شہریت دینے کےلئے شہریت ترمیمی ایکٹ کو پاس کیا ہے ۔کورونا وئرس کی وجہ سے اس قانون کے نفاذ میں تاخیر ہوئی ے مگر اب یہ جلد ہی نافذ ہوگا۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *