موریتانیہ میں اسرائیل کے ساتھ دوستانہ تعلقات کو ’ جرم ‘ قرار دینے کا مطالبہ

موریتانیہ میں اسرائیل کے ساتھ دوستانہ تعلقات کو ’ جرم ‘ قرار دینے کا مطالبہ

نواکشوط: افریقی ملک موریتانیہ کی پارلیمنٹ کے کئی ارکان نے پارلیمنٹ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اسرائیل کے ساتھ دوستی کو جرم قرار دینے کے لیے قانون سازی کرے۔
مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق موریتانیہ کی تین بڑی اپوزیشن جماعتوں پروگریسیو الائنس فورسز، پیپلز پروگریسیو الائنس اور اتحاد برائے انصاف وجمہوریت پر مشتمل اتحاد نے پارلیمنٹ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اسرائیل کے ساتھ دوستانہ تعلقات کے قیام کو غداری قرار دے اور اسے جرم قرار دینے کے لیے قانون سازی کرے۔
اپوزیشن جماعتوں کا کہنا ہے کہ اس میں کوئی شبہ نہیں کہ اسرائیل اب مغربی افریقی ملکوں تک اپنے اثرو رسوخ کو پھیلانے کی کوشش کر رہا ہے۔ خطے کے بعض ممالک صہیونی ریاست کے ساتھ اعلانیہ اور خفیہ تعلقات کو بھی فروغ دینے کی مذموم کوشش کر رہے ہیں۔
موریتانوی پارلیمانی بلاک نے حکومت پر زور دیا ہے کہ وہ مسئلہ فلسطین کے منصفانہ حل کے لیے اقدامات کرے اور اسرائیل کے ساتھ دوستی کے لیے کسی مقامی، علاقائی اور عالمی دباؤ میں نہ آئے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *