برڈ فلو: متاثرہ علاقوں کی نگرانی سخت، ریاستوں کے لئے مشاورت جاری

برڈ فلو: متاثرہ علاقوں کی نگرانی سخت، ریاستوں کے لئے مشاورت جاری

محکمہ نے متاثرہ ریاستوں کے لئے مشاورت جاری کی ہے، جس سے بیماری کے پھیلاؤ کو روکاجا سکے۔

ہریانہ کے ضلع پنچکولہ کی دو پولٹری کمپنیوں سے لئے گئے نمونوں میں آئی سی اے آر-این آئی ایچ ایس اے ڈی کے ذریعہ ایوین فلو(اے آئی) کی تصدیق کے بعد مدھیہ پردیش کے شیوپوری، راج گڑھ ، شاجاپور، آگر، ودیشہ، اتر پردیش کے زولوجیکل پارک، کانپور اورراجستھان کے پرتاپ گڑھ و دوسا اضلاع میں مہاجر پرندوں میں ایوین فلو کے معاملات درج کئے گئے ہیں۔

محکمہ نے متاثرہ ریاستوں کے لئے مشاورت جاری کی ہے، جس سے بیماری کے پھیلاؤ کو روکاجا سکے۔ اب تک سات ریاستوں (کیرالا ، راجستھان ، مدھیہ پردیش ، ہماچل پردیش ، ہریانہ ، گجرات اور اتر پردیش) میں اس بیماری کی تصدیق ہوچکی ہے۔ دہلی میں کووں کی موت کے بعد ان کے نمونے جانچ کے لئے بھیج دیئے گئے ہیں اور اتوار کے روز کرناٹک کے جنوبی علاقے میں ایک کھمبے کے نیچے دو چیلوں کی موت کے بعد ان کے نمونے بھی جانچ کے لئے بنگلورو بھیجے گئے ہیں۔

ریاست چھتیس گڑھ کے ضلع بالود میں 08 جنوری کی رات اور 9 جنوری کی صبح مرغیوں اور جنگلی پرندوں کی غیر معمولی موت کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔ ریاست نے ہنگامی صورتحال کے لئے آر آر ٹی ٹیمیں تشکیل دی ہیں اورمخصوص لیبارٹری کو نمونےبھیج دیئے گئے ہیں۔

اس کے علاوہ سنجے جھیل، دہلی سے بھی بطخوں کی غیرمعمولی موت کی خبریں موصول ہوئی ہیں۔ ٹیسٹ کےلئے نمونے مخصوص لیبارٹری کو ارسال کردیئے گئے ہیں۔ مہاراشٹر کے ممبئی ، تھانے، داپولی ، پربھنی اور بیڈ اضلاع سے اے آئی کی تصدیق کے لئے مردہ کووں کے نمونے این آئی ایچ ایس اے ڈی کو بھیجے گئے ہیں۔

اس کے علاوہ کیرالہ کے دو متاثرہ اضلاع میں پرندوں کے قتل کی کارروائی مکمل کرلی گئی ہے اور ریاست میں پوسٹ آپریشنل سرویلانس پروگرام سے متعلق ہدایات جاری کی گئی ہیں۔ کیرالا ، ہریانہ اور ہماچل پردیش کے متاثرہ علاقوں کی نگرانی کے مقصد سے دورہ کے لئے سنٹرل ٹیمیں مقرر کی دی گئی ہیں اور کیرالا میں وبا کی تحقیقات کے لئے مرکزی ٹیمیں پہنچ گئی ہیں۔

ریاستوں / مرکزکے زیراہتمام ریاستوں کے چیف سکریٹریوں / منتظمین کو بھیجے گئے خط میں سیکریٹری ڈی اے ایچ ڈی نے ریاستی مویشی پروری محکمات سے بیماری کی صورت حال پر نظررکھنے کے لئے صحت افسران کے ساتھ موثربات چیت اورتال میل کویقینی بنانے اور انسانوں میں بیماری کے پھیلاو کے امکانات سے بچنے کی درخواست کی ہے۔ اس کے علاوہ ، پانی کے ذرائع ، پرندوں کی منڈیاں، چڑیا گھروں ، پولٹری فارموں وغیرہ کے آس پاس نگرانی بڑھا دی گئی ہے، پرندوں کی باقیات کومناسب طریقے سے ضائع کرنےاور پولٹری فارموں میں مضبوط بایوسکیوریٹی یقینی کی گئی ہے۔ ریاستوں سے بھی ایونیوفلو کے کسی واقعہ کو لے کر تیار رہنے کی درخواست کی گئی ہے اور پرندوں کو مارنے کی مہم کے لئے پی پی کٹس اورایسسریزکے مناسب ذخیرے کو یقینی بنانے کے لئے کہا گیا ہے۔

چیف سکریٹریوں / ایڈمنسٹریٹروں سے افواہوں سے متاثرہ صارفین کے لئے مناسب مشورے جاری کرنے کا بندوبست کےنے اورایسے پولٹری یا پولٹری مصنوعات کی حفاظت کے بارے میں بیداری پیداکرنے کی درخواست کی گئی ہے جو ابلنے/پکنے کے بعد کھانے کے لئے محفوظ ہیں۔ ریاستوں کے لئے بھی ڈی اےایچ ڈی کا تعاون یقینی بنایا گیا ہے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *