کرنال میں ہوئے کل کے ہنگامہ پر 71مظاہرین کے خلاف ایف آئی آر درج

کرنال میں ہوئے کل کے ہنگامہ پر 71مظاہرین کے خلاف ایف آئی آر درج

پولیس نے کرنال میں مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے پانی کی بوچھار،آنسو گیس اور لاٹھی چارج کا استعمال کیا لیکن خبر آ رہی ہے کہ انتظامیہ نے 71لوگوں کے خلاف ایف آئی آر درج کی ہے۔
نئے زرعی قوانین کو ختم کرنے کے مطالبہ کو لے کر کسان دہلی کی سرحدوں پر گزشتہ 46 دنوں سےاحتجاج کر رہے ہیں ۔ اس دوران ان احتجاج کر رہے کسانوں کی حکومت سےآٹھ دور کی بات چیت بھی ہو چکی ہے لیکن ان بات چیت کا کوئی نتیجہ نہیں نکلا ہے۔
ہریانہ کے کرنال ضلع میں کل وزیر اعلی منوہر لال کھٹر کی ایک تقریب تھی لیکن احتجاج کر رہے کسانوں نےان کےوہاں آنے کے خلاف احتجاج کیا۔پولیس نے ان مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے پانی کی بوچھار،آنسو گیس اور لاٹھی چارج کا استعمال کیا لیکن اب خبر آ رہی ہے کہ انتظامیہ نے 71 لوگوں کے خلاف ایف آئی آر درج کی ہے۔واضح رہے اس ہنگامہ کے بعد وزیر اعلی منوہر لال کھٹر کو اپنا دور ہ رد کرنا پڑا تھا ۔
ایک جانب جہاں آج سپریم کورٹ میں اس معاملہ پر سنوائی ہوناہے تو دوسری جانب کسان اس سردی کے موسم میں دہلی کی سرحدوں پر ڈٹے ہوئے ہیں۔کسان اور حزب اختلاف مستقل مرکزی حکومت کو تنقید کا نشانہ بنائے ہوئے ہیں اور حکومت پر ان قوانین کو ختم کرنے کا دباؤ بنائے ہوئے ہیں۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *