کشمیر: ریکارڈ ساز سردیاں جاری، آبی ذخائر منجمد

کشمیر: ریکارڈ ساز سردیاں جاری، آبی ذخائر منجمد

محکمہ کے ایک ترجمان کے مطابق سری نگر میں گزشتہ شب کا کم سے کم درجہ حرارت منفی 7.8 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔

سری نگر: وادی کشمیر میں خشک موسم کے بیچ ریکارڈ ساز سردیوں نے لوگوں کو بے حال کر دیا ہے۔ گرمائی دارلحکومت سری نگر میں منگل اور بدھ کی درمیانی شب نہ صرف رواں موسم سرما کی سرد ترین رات درج ہوئی بلکہ اس ٹھنڈ نے آٹھ سالہ ریکارڈ کو برابر کیا جب کم سے کم درجہ حرارت منفی 7.8 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔

محکمہ موسیات کے ایک ترجمان نے بتایا کہ قبل ازیں سال2012 میں ماہ جنوری کی 14 تاریخ کو کم سے کم درجہ حرارت منفی 7.8 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ سری نگر میں جنوری 1995 میں شبانہ درجہ حرارت منفی 8.3 ڈگری تک گر گیا تھا جبکہ جنوری 1991 میں کم سے کم درجہ حرارت منفی 11.8 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔ دریں اثنا متعلقہ محکمہ کی پیش گوئی کے مطابق وادی کشمیر میں 20 جنوری تک موسم خشک رہنے کی توقع ہے۔

وادی کشمیر میں بدھ کے روز اگرچہ موسم خشک رہا اور دن میں ہلکی دھوپ بھی چھائی رہی تاہم شبابہ ریکارڈ ساز سردی سے شہر و گام کے آبی ذخائر بشمول شہرہ آفاق جھیل ڈل منجمد ہوگئے تھے۔ گھروں، جامع مساجد، خانقاہوں اور عوامی سطح کے غسل خانوں میں نصب نلکوں میں پانی جم گیا تھا جس کی وجہ سے لوگوں کو صبح کے وقت وضو کرنے کے لئے پانی کی قلت کا سامنا کرنا پڑا۔

وادی کی سڑکوں پر کہرا لگ گیا تھا جس کی وجہ سے صبح کے وقت ٹرانسپورٹ میں خلل واقع ہوا اور پھسلن کی وجہ سے کئی مقامات پر گاڑیوں کے درمیان ٹکر بھی ہوئی۔ متعلقہ محکمہ کے ایک ترجمان کے مطابق سری نگر میں گزشتہ شب کا کم سے کم درجہ حرارت منفی 7.8 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔ وادی کے شہرہ آفاق سیاحتی مقام گلمرگ میں کم سے کم درجہ حرارت منفی 10.0 ڈگری سینٹی گریڈ جبکہ دوسرے مشہور سیاحتی مقام پہلگام میں کم سے کم درجہ حرارت منفی 11.7 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ ہوا ہے۔

سرحدی ضلع کپوارہ میں گزشتہ شب کا کم سے کم درجہ حرارت منفی 5.6 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جبکہ قاضی گنڈ میں منفی 9.3 ڈگری سینٹی گریڈ اور ککر ناگ میں کم سے کم درجہ حرارت منفی 9.9 ڈگری سینٹی گریڈ ہوا ہے۔ لداخ یونین ٹریٹری کے ضلع کرگل میں کم سے کم درجہ حرارت منفی 19.6 ڈگری سینٹی گریڈ جبکہ ضلع لیہہ میں منفی 16.3 ڈگری سینٹی گریڈ اور قصبہ دراس میں کم سے کم درجہ حرارت منفی 28.4 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔

قابل ذکر ہے کہ وادی کشمیر میں سردیوں کے بادشاہ چالیس روزہ چلہ کلان کے دور اقتدار کا نصف حصہ مکمل ہوچکا ہے۔ چلہ کلان نے اپنے دور اقتدار کے نصف حصے میں بھر طاقت کا مظاہرہ کرکے لوگوں کو اپنی موجودگی کا بھر پور احساس بھی دلایا۔ چلہ کلان کا دوراقتدار 31 جنوری کو اختتام پذیر ہوگا جس کے بعد بیس روزہ چلہ خورد تخت نشین ہوگا تاہم اس کے دور میں سردیوں کے زور میں بتدریج کمی واقع ہوجاتی ہے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *