مسجد اقصیٰ میں اسرائیلی سرگرمیاں قابل مذمت: عالمی علما اتحاد

مسجد اقصیٰ میں اسرائیلی سرگرمیاں قابل مذمت: عالمی علما اتحاد

استنبول: بین الاقوامی علما اتحاد نے مسجد اقصیٰ میں اسرائیلی مداخلت کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اسرائیل سے مسجد اقصیٰ میں اشتعال انگیزی پھیلانے اور مسجد میں کھدائیوں کا سلسلہ بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔
مرکز اطلاعات فلسطین کے مطابق جمعرات کے روز ترکی میں عالمی علما کونسل کے صدر دفتر سے جاری ایک بیان میں‌کہا گیا ہے کہ مسجد اقصیٰ میں رونما ہونے والے تازہ واقعات جن میں اسرائیلی ریاست کی کھلی مداخلت کا پتا چلا ہے فلسطینی مقدسات پر قبضے، فلسطینی اراضی کے سرقے اور بیت المقدس شہر کے اسلامی اور عرب تشخص کو ختم کرنا ہے۔
علما نے مسجد اقصیٰ میں اسرائیلی ریاست کی مداخلت کو مذہبی اشتعال انگیزی قرار دیتے ہوئے ان حملوں کو جارحانہ اور ناقابل قبول قرار دیا ہے۔
عالمی علما اتحاد نے عالم اسلام کی قیادت، عرب لیگ، اسلامی تعاون تنظیم، دانشوروں، سیاسی رہنماؤں اور انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والے عالمی اداروں سے اپیل کی ہے کہ وہ مسجد اقصیٰ کے حوالے سے اپنی اخلاقی، دینی اور سفارتی ذمہ داریاں پوری کریں اور اسرائیل کو مسجد اقصیٰ میں ہونے والی پامالیوں سے باز رکھیں۔
عالمی علما اتحاد نے عرب اور مسلم اقوام پر بھی زور دیا کہ وہ مسجد اقصیٰ کے دفاع کے لیے سڑکوں پر آئیں اور قبلہ اول کی مسلسل بے حرمتی کے واقعات اور اسرائیلی ریاست کی مجرمانہ مداخلت کی روک تھام کے لیے مؤثر اقدامات کریں۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *