امیر شریعت مولانا محمد ولی رحمانی کی وفات پر مدرسہ تعلیم القرآن نبی کریم میں تعزیتی اجلاس کا انعقاد 

امیر شریعت مولانا محمد ولی رحمانی کی وفات پر مدرسہ تعلیم القرآن نبی کریم میں تعزیتی اجلاس کا انعقاد 

نئی دہلی: (پریس ریلیز) مدرسہ تعلیم القرآن نبی کریم کے زیر اہتمام امیر شریعت اور آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کے جنرل سکریٹری مولانا محمد ولی رحمانی کی وفات پر تعزیتی جلسے کا انعقاد ہوا، جس کی صدارت مولانا عبد السبحان قاسمی صدر جمعیت علماء ضلع چاندنی چوک دہلی نے کی۔ اس موقع پر متعدد اہم شخصیات نے شرکت کی اور اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مولانا درس و تدریس کے رموز سے بھی واقف تھے۔ سیاسی مسائل اور ملکی حالات پر ان کی گہری نظر تھی۔ وہ ملت کے مسائل کو حل کرنا بخوبی جانتے تھے اور مشکل وقت میں پوری اولوالعزمی اور ثابت قدمی کے ساتھ ملت کی رہنمائی اور قیادت کرتے تھے۔ مشکل ترین حالات میں بھی انھوں نے سمجھوتہ نہیں کیا۔ ہمیشہ اعتدال کو سامنے رکھا۔ خواتین کو بھی انہوں نے بھر پور اہمیت دی، ان کی وجہ سے مسلم خواتین کی مثبت تصویر دنیا کے سامنے آئی۔ بے خوفی، بیباکی اور جرأت جو اُن کی ذات میں پائی جاتی تھی، اس کی نظیر ملنا مشکل ہے۔ وہ حکمت و بصیرت سے کام لیتے تھے۔ سیاست، سماجی امور اور ملی میدان کے علاوہ تعلیم کے شعبے میں ان کا کارنامہ قابل فخر اور مثالی ہے۔ وہ سب کو ساتھ لے کر چلتے تھے اور اتحاد امت کو پروان چڑھانے میں ہمیشہ پیش پیش رہتے تھے۔ بلاشبہ مولانا رحمانی کی وفات ایک عہد کا خاتمہ ہے۔

تعزیتی اجلاس اسلامک فقہ اکیڈمی سے وابستہ مفتی احمد نادر القاسمی ۔ جمعیت علماء ہند کے میڈیا انچارج مولانا عظیم اللہ صدیقی ، سمیت متعدد لوگوں نے خطاب کیا علاوہ ازیں مولانا غلام رسول قاسمی ۔ مولانا اکرم قاسمی ۔ مولانا تنویر عالم قاسمی ۔ بھائی طوطا کونسلر ۔ اسلام الدین بھائی ۔ شبیر صاحب ، عبد الجبار صاحب ، فیروز صاحب ، الحاج عزیز صاحب ، مفتی محمد علی ، قاری محمد قیام الدین ۔ مولانا ظفر صدیقی قاسمی ۔ مولانا ابو نصر قاسمی ۔ مولانا علی اکبر ۔ مولانا ربانی صاحب ۔ معظم لڈو۔ بھائی علاء الدین ۔ شفیع الرحمن منا ۔ مولانا شمیم عادل قاسمی نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا اور مولانا کو خراج عقیدت پیش کیا ۔ قبل ازیں قاری قاری لقمان اور حافظ حذیفہ نے تلاوت قرآن سے آغاز کیا اور محمد فیضان نے نعت پیش کیا ۔ مولانا نیاز احمد قاسمی امام وخطیب مسجد سرائے خلیل دہلی کی دعاء پر اختتام ہوا ۔

واضح رہے کہ نائب امیر شریعت مولانا شمشاد رحمانی نے اس موقع پر مولانا عبد السبحان قاسمی کے نام اپنا تعزیتی پیغام بھیجا اور کہاکہ اس اجلاس میں میں بھی شریک ہونا چاہ رہا تھا لیکن کسی مصروفیت کی وجہ سے نہیں ہوسکا تاہم ہم مکمل طور پر آپ کے ساتھ ہیں۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *