پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں پھر اضافہ

پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں پھر اضافہ

حزب اختلاف کی جانب سے بارہا ایکسائز ڈیوٹی کم کئے جانے کا جو مطالبہ کیا جا رہا ہے اس پر حکومت کوئی توجہ نہیں دے رہی اور لگاتار خزانہ بھرنے میں مصروف ہے

نئی دہلی: ملک کے عوام پر گزشتہ ڈھائی مہینوں سے تیل قیمتوں کی مار کا سلسلہ لگاتار جاری ہے اور دو روز مستحکم رہنے کے بعد پٹرول اور ڈیزل کے داموں میں آج پھر اضافہ کر دیا گیا۔ یو این آئی اردو کے مطابق بین الاقوامی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں تیزی کا اثر جمعرات کو گھریلو سطح پر نظر آیا، مگر اس سلسلہ میں حزب اختلاف کی جانب سے بارہا ایکسائز ڈیوٹی کم کئے جانے کا جو مطالبہ کیا جا رہا ہے اس پر حکومت کوئی توجہ نہیں دے رہی اور لگاتار خزانہ بھرنے میں مصروف ہے۔

ملک کے مختلف شہروں میں جمعرات کے روز پٹرول میں 35 پیسے فی لیٹر کا اضافہ کیا گیا جس کے ساتھ یہ نئی ریکارڈ سطح پر پہنچ گیا اور جبکہ ڈیزل میں 15 پیسے فی لیٹر کا اضافہ کیا گیا ہے۔ دہلی میں جمعرات کے اضافے کے بعد پٹرول کی قیمت 101.54 روپے اور ممبئی میں 107.55 روپے فی لیٹر پہنچ گئی ہے۔

خیال رہے کہ دہلی میں ڈیزل 15 اپریل کے بعد پہلی مرتبہ پیر کے روز 16 پیسے سستا ہو کر 89.72 روپے فی لیٹر ہو گیا تھا، لیکن آج پھر یہ 15 پیسے بڑھ کر 89.87 روپے فی لیٹر پہنچ گیا۔ دہلی میں مئی اور جون میں پٹرول 8.41 روپے اور ڈیزل 8.45 روپے مہنگا ہو ہو چکا تھا اور جولائی میں اب تک پٹرول 2.73 روپے اور ڈیزل 71 پیسے فی لیٹر مہنگا ہو چکا ہے۔

آج ملک کے چار بڑے شہروں میں پٹرول اور ڈیزل کی قیمتیں مندرجہ ذیل ہیں:

شہر —————— پٹرول ——————— ڈیزل

دہلی ————— 101.54 —————— 89.87

ممبئی ————— 107.54 —————— 97.45

چنئی ————— 102.23 —————— 94.39

کولکاتا ————— 101.74 —————— 93.02

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *