پارلیمنٹ میں داخلے پر عائد پابندی ہٹانے کو لے صحافیوں نے نکالا مارچ

نئی دہلی: پارلیمانی اجلاس کے دوران صحافیوں کے پارلیمنٹ میں داخلے پر پابندی کے خلاف ملک کے مشہور و معروف مدیران، صحافیوں اور فوٹو جرنلسٹس نے آج پریس کلب سے پارلیمنٹ ہاؤس تک مارچ نکالا۔ صحافیوں نے مطالبہ کیا ہے کہ مستقل پاس والے صحافیوں کو پارلیمنٹ احاطہ اور راجیہ سبھا و لوک سبھا کے پریس سیکشن میں داخلے کی اجازت دی جانی چاہیے تاکہ وہ ایوان کی کارروائی کو پہلے کی طرح باضابطہ طور پر کور کر سکیں۔
حکومت نے کووڈ ضابطوں کا حوالہ دیتے ہوئے صحافیوں کے پارلیمنٹ میں داخلے پر پابندی لگا دی ہے۔ صحافیوں نے کہا ہے کہ جولائی میں لوک سبھا سربراہ نے طے کیا تھا کہ پارلیمنٹ کو مستقل پاس ہولڈرس کو کور کرنے کے لیے صحافی پہلے کی طرح طویل راہ گیر بن جائیں گے، اس فیصلے کو نافذ کیا جانا چاہیے۔ وہیں پارلیمنٹ کے سنٹرل ہال کے پاس بنائے جانے پر لگائی گئی روک کو ہٹاتے ہوئے پہلے کی طرح نئے پاس بنائے جائیں۔
صحافیوں کا کہنا ہے کہ جن صحافیوں کو اجلاس کی پوری مدت کے لیے پاس مل جاتے تھے، انھیں پہلے کی طرح ہی بنایا جانا چاہیے تاکہ وہ ایوان کی کارروائی کو کور کر سکیں کیونکہ صحافیوں کے داخلے پر پابندی کے سبب ان کی ملازمت اور سروس بھی متاثر ہوتی ہے۔ اس سے انھیں چھٹنی کا بھی سامنا کرنا پڑا ہے۔
(بشکریہ قومی آواز)

ads
SHARE
ملت ٹائمز میں خوش آمدید ۔ اپنے علاقے کی خبریں ، گراﺅنڈ رپورٹس اور سیاسی ، سماجی ،تعلیمی اورادبی موضوعات پر اپنی تحریر آپ براہ راست ہمیں میل کرسکتے ہیں ۔ millattimesurdu@gmail.com