آنند سبرامنیم نے ہی بنائی تھی نامعلوم یوگی کی ای میل آئی ڈی

جیسے جیسے این ایس ای گھوٹالے میں سی بی آئی کی تفتیش آگے بڑھ رہی ہے، اس سے جڑی کئی پرتیں بے نقاب ہو رہی ہیں۔ سی بی آئی نے جمعہ کو دعویٰ کیا کہ این ایس ای کے سابق ایم ڈی اور سی ای او چترا رام کرشنا جس ای میل آئی ڈی پر ‘نامعلوم یوگی’ (ہمالیان یوگی) سے بات کرتی تھیں، اسے مبینہ طور پر ان کے اپنے پسندیدہ گروپ آپریٹنگ آفیسر آنند سبرامنیم نے بنایا تھا۔

این ایس ای گھوٹالے میں ‘نامعلوم یوگی’ کے اینگل نے سب کو حیران کر دیا ہے۔ این ایس ای کے فارنسک آڈٹ میں آنند سبرامنیم کو مبینہ طور پر ‘ہمالیہ یوگی’ بتایا گیا تھا لیکن مارکیٹ ریگولیٹر سیبی نے اپنی آخری رپورٹ میں آنند سبرامنیم کے ‘یوگی’ ہونے کے دعوے کی تردید کی تھی۔ تب سی بی آئی نے بھی اپنی ابتدائی جانچ میں سبرامنیم کے ‘یوگی’ ہونے کا شبہ ظاہر کیا تھا۔

سی بی آئی اب اس معاملے میں آنند سبرامنیم اور چترا رام کرشن کے سیشلز کے سفر کی بھی جانچ کر رہی ہے۔ سیشلز کو ٹیکس ہیون ملک سمجھا جاتا ہے۔ چترا رام کرشن اور ‘ہمالین یوگی’ کے درمیان ای میل کی بات چیت میں ان کے سیشلز جانے کا حوالہ ملا ہے۔

اس کے علاوہ، سی بی آئی اب اس بات کی بھی جانچ کر رہی ہے کہ آیا ‘نامعلوم یوگی’ کی ای میل آئی ڈی ‘rigyajursama@outlook.com’ خود آنند سبرامنیم استعمال کر رہا تھا یا کوئی اور چترا رام کرشنا سے بات کرتا تھا۔ سی بی آئی نے آنند سبرامنیم اور چترا رام کرشنا کو این ایس ای سے متعلق ایک اور گھوٹالہ میں بھی گرفتار کیا ہے۔

مارکیٹ ریگولیٹر سیبی نے این ایس ای گھوٹالے سے متعلق اپنے 7 فروری کے حکم میں کہا تھا کہ این ایس ای کے اس وقت کی سی ای او اور ایم ڈی چترا رام کرشنا تمام فیصلے کچھ نامعلوم یوگی کے کہنے پر لے رہی تھیں۔ تحقیقات کے دوران جب سیبی نے چترا سے یوگی کے بارے میں پوچھا تو این ایس ای کی سابق سی ای او نے کہا تھا کہ وہ ایک روحانی طاقت ہیں، جو ہمالیہ میں گھومتے ہیں۔ چترا نے کہا تھا کہ یوگی کا اپنا کوئی جسم نہیں ہے اور وہ جہاں چاہے ظاہر ہو سکتے ہیں۔

SHARE
ملت ٹائمز میں خوش آمدید ۔ اپنے علاقے کی خبریں ، گراﺅنڈ رپورٹس اور سیاسی ، سماجی ،تعلیمی اورادبی موضوعات پر اپنی تحریر آپ براہ راست ہمیں میل کرسکتے ہیں ۔ millattimesurdu@gmail.com