نائجیریا میں آئل ریفائنری میں دھماکہ، 100 سے زائد افراد ہلاک

تفصیلات کے مطابق ایک مقامی حکومتی اہل کار اور ایک ماحولیاتی گروپ نے بتایا ہے کہ نائجیریا کی ریورز ریاست میں تیل صاف کرنے کے غیر قانونی ڈپو میں ہونے والے دھماکے میں رات بھر 100 سے زیادہ افراد ہلاک ہو گئے۔

پیٹرولیم وسائل کے ریاستی کمشنر گڈ لک اوپیاہ نے ہفتے کے روز کہا کہ ایک غیر قانونی بنکرنگ سائٹ پر آتش زدگی سے سو سے زیادہ لوگ ہلاک ہو گئے ہیں جن کی لاشیں بھی ناقابل شناخت ہو گئی ہیں۔

یوتھ اینڈ انوائرمینٹل ایڈووکیسی سینٹر کے مطابق کئی گاڑیاں جو غیر قانونی ایندھن خریدنے کے لیے قطار میں کھڑی تھیں، دھماکے میں جل کر تباہ ہو گئیں۔

غیر قانونی ریفائنری کا مالک واقعے کے بعد فرار ہو گیا ہے، اور حکومت نے اسے مطلوب قرار دے دیا ہے، حکام کا کہنا ہے کہ اگر وہ پکڑا جاتا ہے تو امید ہے کہ یہ معلوم ہو سکے کہ ریفائنری میں کیا ہوا تھا۔

عالمی ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ تیل پیدا کرنے والے نائجر ڈیلٹا میں بے روزگاری اور غربت نے خام تیل کی غیر قانونی ریفائننگ کو ایک پرکشش لیکن مہلک کاروبار بنا دیا ہے۔

خام تیل کو تیل کی بڑی کمپنیوں کی ملکیت والی پائپ لائنوں کے جال کے ذریعے عارضی ٹینکوں میں پہنچایا جاتا ہے جہاں اسے صاف کر کے مصنوعات میں بدلا جاتا ہے۔

SHARE
ملت ٹائمز میں خوش آمدید ۔ اپنے علاقے کی خبریں ، گراﺅنڈ رپورٹس اور سیاسی ، سماجی ،تعلیمی اورادبی موضوعات پر اپنی تحریر آپ براہ راست ہمیں میل کرسکتے ہیں ۔ millattimesurdu@gmail.com