دہلی ایم سی ڈی الیکشن: کونسلر کا ٹکٹ دلانے کے نام پر 90 لاکھ کا مطالبہ، عآپ ایم ایل اے کے بہنوئی سمیت 3 گرفتار

دہلی میں ایم سی ڈی انتخابات میں ٹکٹ کے بجائے نقد کا کھیل شروع ہو گیا ہے۔ انسداد بدعنوانی بیورو (اے سی بی) نے کملا نگر وارڈ (نمبر 69) کے لیے میونسپل کارپوریشن (ایم سی ڈی) کے ٹکٹ 90 لاکھ روپے میں فروخت کرنے کے الزام میں عآپ ایم ایل اے اکھلیش پتی ترپاٹھی کے رشتہ دار سمیت تین لوگوں کو گرفتار کیا ہے۔

گرفتار افراد کی شناخت عآپ ایم ایل اے اکھلیش پتی ترپاٹھی کے بہنوئی اوم سنگھ اور ترپاٹھی کے پی اے شیو شنکر پانڈے عرف وشال پانڈے اور پرنس رگھوونشی کے طور پر کی گئی ہے۔ انہیں پی او سی ایکٹ کی دفعہ 7/13 اور آئی پی سی کی دفعہ 171 (اے) کے تحت گرفتار کیا گیا ہے۔

انسداد بدعنوانی بیورو (اے سی بی) کے ڈی سی پی مدھور ورما نے کہا کہ شکایت کنندہ گوپال کھاری کی بیوی شوبھا کھاری نے عام آدمی پارٹی سے کونسلر کے ٹکٹ کا مطالبہ کیا تھا۔ شوبھا کا الزام ہے کہ ایم ایل اے اکھلیش پتی ترپاٹھی نے ٹکٹ حاصل کرنے کے عوض 90 لاکھ روپے کا مطالبہ کیا تھا۔ انہوں نے ترپاٹھی کو 35 لاکھ روپے اور وزیر پور کے ایم ایل اے راجیش گپتا کو 20 لاکھ روپے رشوت کے طور پر دیئے تھے۔

شوبھا کھاری نے مزید بتایا کہ باقی 35 لاکھ روپے ٹکٹ ملنے کے بعد دینے تھے، لیکن جب شوبھا نے فہرست میں نام نہ آنے پر رقم واپس کرنے کا مطالبہ کیا، تو وہاں سے سے کوئی جواب نہ ملنے پر اس کی شکایت اے سی بی سے کی اور رشوت دیتے ہوئے ریکارڈ کی گئی ویڈیو کو بھی ثبوت کے طور پر اے سی بی کو پیش کیا گیا۔

شکایت موصول ہونے کے بعد، اے سی بی نے ملزمین کو پکڑنے کے لیے اپنے اعلیٰ افسران کی ایک ٹیم تشکیل دی۔ 15 اور 16 نومبر کی درمیانی رات کو اے سی بی کی ٹیم نے کھاری کی رہائش گاہ پر جال بچھایا، جہاں ملزم سنگھ اور اس کے ساتھی پانڈے اور رگھوونشی جب رشوت کی رقم واپس کرنے آئے تو انہیں گواہوں کی موجودگی میں رنگے ہاتھوں گرفتار کر لیا۔ اہلکار نے بتایا کہ 33 لاکھ روپے رشوت کی رقم ضبط کر لی گئی ہے۔ اور معاملے کی مزید تفتیش جاری ہے۔

SHARE
ملت ٹائمز میں خوش آمدید ۔ اپنے علاقے کی خبریں ، گراﺅنڈ رپورٹس اور سیاسی ، سماجی ،تعلیمی اورادبی موضوعات پر اپنی تحریر آپ براہ راست ہمیں میل کرسکتے ہیں ۔ millattimesurdu@gmail.com