القدس میں یہودیوں کے فلیگ مارچ پر عرب پارلیمنٹ کی شدید مذمت

القدس میں یہودیوں کے فلیگ مارچ پر عرب پارلیمنٹ کی شدید مذمت

قاہرہ: عرب ممالک کی نمائندہ پارلیمنٹ نے مقبوضہ بیت المقدس میں یہودی آبادکاروں کے اشتعال انگیز فلیگ مارچ کی شدید مذمت کرتے ہوئے اس کے تمام نتائج کی ذمہ داری اسرائیلی ریاست پرعاید کی ہے۔
مرکز اطلاعات فلسطین کے مطابق عرب پارلیمنٹ کے اسپیکر عادل العسومی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اسرائیل کا ریاستی سطح پر یہودی آباد کاروں کے فلیگ مارچ کی حمایت صہیونی ریاست کی ریاستی اشتعال انگیزی ہے۔
اسرائیل کی طرف سے یہودی آباد کاروں کے اشتعال انگیز مارچ پر اسرار خطے میں پہلے سے جاری کشیدگی کو مزید بھڑکانے کا باعث بنے گی۔ ان کا کہنا ہے کہ مسجد اقصیٰ کے گردو پیش میں یہودی آباد کاروں کی پرچم بردار ریلی اس بات کا ثبوت ہے کہ اسرائیل دانستہ طور پر اس طرح کی سرگرمیوں کی حوصلہ افزائی کرکے کشیدگی کو بھڑکانے کی کوشش کررہا ہے۔
العسومی نے مزید کہا کہ اس وقت سب سے زیادہ خطرہ اسرائیل کے انتہا پسند یہودیوں سے القدس کے دینی مقامات کو لاحق ہے۔ یہودی آباد کاروں کا اشتعال انگیز مارچ کروڑوں مسلمانوں کی دل آزاری اور مسلمانوں اور مسیحی برادری کے لیے تشویش کا باعث ہے۔
عرب پارلیمنٹ کے اسپیکر کا کہنا تھا کہ یہودی آباد کاروں کی اشتعال انگیزی اور فلیگ مارچ جیسے مذموم اقدامات خطے میں امن اور جنگ بندی کی کوششوں کو تباہ کرنے اور پورے خطے میں کشیدگی کی آگ کو بھڑکانے کا باعث بنے گی۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *