سعودی عرب کے مقدس شہر مدینہ منورہ میں پایا گیا سونے کا بڑا ذخیرہ، 533 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری کے مواقع

الریاض: سعودی عرب نے حال ہی میں اعلان کیا ہے کہ اسے مقدس شہر مدینہ منورہ میں سونے اور تانبے کے نئے ذخائر ملے ہیں۔ ایک ٹویٹر پوسٹ میں سعودی جیولوجیکل سروے نے بتایا ہے کہ سونے کے ذخائر مدینہ کے علاقے ابا الراحہ کی سرحد میں موجود ہیں۔ حکام نے بتایا کہ مدینہ کے المدق علاقے میں وادی الفارع میں بھی تانبے کی دھاتیں ملی ہیں۔ سعودی جیولوجیکل سروے نے سوشل میڈیا پر لکھا کہ ہماری دریافت سے سعودی عرب اب دنیا کو سرمایہ کاری کے مزید پرکشش مواقع فراہم کر رہا ہے۔

العربیہ کی خبر کے مطابق نئی دریافت مقامی اور بین الاقوامی سرمایہ کاروں کو راغب کرے گی۔ اس سے قومی معیشت ترقی کرے گی۔ حکام کو توقع ہے کہ سونے اور تانبے کی دھاتوں کے نئے دریافت شدہ ذخائر تقریباً 533 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری کو راغب کریں گے اور تقریباً 4,000 نئی ملازمتیں پیدا ہوں گی۔

سعودی عرب میں معدنی ذخائر کے تقریباً 5,300 مقامات ہیں۔ اس میں کئی قسم کے معدنیات پائے جاتے ہیں۔ سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے کان کنی کی توسیع کو اپنے ویژن 2030 کا ایک اہم حصہ قرار دیا ہے۔ اس سال مئی میں سعودی عرب کی وزارت صنعت اور معدنی وسائل نے کان کنی کے شعبے میں 32 بلین ڈالر کی سرمایہ کاری کو راغب کرنے کا منصوبہ بنایا تھا۔

SHARE
ملت ٹائمز میں خوش آمدید ۔ اپنے علاقے کی خبریں ، گراﺅنڈ رپورٹس اور سیاسی ، سماجی ،تعلیمی اورادبی موضوعات پر اپنی تحریر آپ براہ راست ہمیں میل کرسکتے ہیں ۔ millattimesurdu@gmail.com