غرب اردن میں ایک ہفتے میں 4 فلسطینی شہید، ایک آباد کار ہلاک

غرب اردن میں ایک ہفتے میں 4 فلسطینی شہید، ایک آباد کار ہلاک

نابلس: فلسطین کے علاقے مقبوضہ مغربی کنارے میں گذشتہ ہفتے اسرائیلی فوج کی ریاستی دہشت گردی میں کم سے کم چار فلسطینی شہید ہوگئے جب کہ قابض فوج کے خلاف فلسطینیوں کی عوامی مزاحمت کےدوران ایک اسرائیلی آباد کار ہلاک اور 11زخمی ہوگئے۔
مرکز اطلاعات فلسطین کے مطابق گذشتہ ایک ہفتے کے دوران اسرائیلی فوج اور فلسطینی شہریوں کےدرمیان غرب اردن میں ہونےوالی جھڑپوں کے نتائج جاری کیے گئے ہیں۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ گذشتہ ہفتے غرب اردن میں فلسطینی شہریوں اور قابض فوج کےدرمیان 79 مقامات پر جھڑپیں ہوئیں۔ ان جھڑپوں میں چار فلسطینی شہید ہوئے۔ دوسری طرف فلسطینیوں کی مزاحمتی کارروائی میں جنین شہر میں ایک یہودی آباد کار ہلاک اور 11 زخمی ہوئے۔
گذشتہ جمعہ کو اسرائیلی فوج اور فلسطینیوں میں 10 مقامات پر جھڑپیں ہوئیں۔ اس روزجنوبی نابلس میں جبل صبیح میں بیتا کے مقام پر زخمی ہونے والا 15 سالہ بچہ محمد حمایل شہید ہوگیا۔
اس روز مقبوضہ بیت المقدس میں باب الحطہ، باب العامود اور الشیخ جراح کے مقامات پر بھی فلسطینیوں اور اسرائیلی فوج میں جھڑپیں ہوئیں۔ غرب اردن میں رام اللہ ، بیت دجن، نابلس، نعلین، کفر قدوم، قلقیلیہ اور سلفیت میں الراس کے مقامات پر فلسطینیوں اور اسرائیلی فوج میں جھڑپیں ہوئیں۔
جمعرات کو اسرائیلی فوج اور فلسطینی شہریوں کے درمیان غرب اردن میں 12 مقامات پر جھڑپیں ہوئیں۔ جنین میں اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے القدس بریگیڈ کے مجاھد جمیل محمود العموری، فلسطینی سیکیورٹی فورسز کے دو ارہلکا یاسر توفیق علیوی اور تیسیر محمود عثمان عیسیٰ جام شہادت نوش کرگئے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *