سعودی ولی عہد محمد بن سلمان سے پی ایم مودی کی ملاقات ،مختلف امور پر تبادلہ خیال

دونوںرہنماوں نے معاشی، سیاسی، سلامتی، فوجی اور ثقافتی شعبوں میں دو طرفہ تعاون پر بات چیت کیا۔میٹنگ کے دوران سعودی عرب نے ہندوستان کی تیل اور پٹرولیم اشیا کی ضرورتوں کی تکمیل کی یقین دہانی کرائی

ads

ماسکو(یو این آئی )
جی۔20 کانفرنس میں حصہ لینے کےلئے دو روزہ ارجنٹینا کے دورے پر گئے وزیراعظم مودی نے سعودی عرب کے شہزادے محمد بن سلمان کے ساتھ میٹنگ کی اور اس میٹنگ کے دوران سعودی عرب نے ہندوستان کی پٹرولیم ضرورتوں کو پورا کرنے کی یقین دہانی کرائی۔
روس کی خبر رساں ایجنسی اسپوٹنک کے مطابق جمعہ کو ارجنٹیناکے بیونس آئرس میں مودی نے محمد بن سلمان کے ساتھ میٹنگ کی۔ دونوںرہنماوں نے معاشی، سیاسی، سلامتی، فوجی اور ثقافتی شعبوں میں دو طرفہ تعاون پر بات چیت کیا۔میٹنگ کے دوران سعودی عرب نے ہندوستان کی تیل اور پٹرولیم اشیا کی ضرورتوں کی تکمیل کی یقین دہانی کرائی۔ جی۔20 کانفرنس ارجنٹینا کے بیونس آئرس میں جمعہ کو شروع ہوگا۔
ادھر صحافی جمال خاشقجی کے قتل کے سلسلے میں انسانی حقوقی کے بین الاقوامی مشاورت گروپ کے نگراں نے بدھ کو ایک بیان جاری کرکے کہا تھاکہ ارجنٹینا کے فیڈرل پروسیکیوٹر رامیرو گونجالیج شہزادہ محمد بن سلمان کے خلاف مقدمہ لڑنے کے لئے راضی ہوگئے ہیں۔ صحافی خاشقجی کے قتل کےلئے شہزادہ محمد بن سلمان کو مشتبہ مانا جارہا ہے۔ارجنٹینا کے نائب وزیر خارجہ ڈینیل رائے مونڈی نے جمعرات کو اسپوٹنک کو بتایا کہ جی۔20 کے دوران شہزدہ محمد بن سلمان کو ارجنٹینا میں سبھی حقوق حاصل ہیں۔واضح رہے کہ خاشقجی کو 2 اکتوبر کو اپنی شادی کے دستاویز لینے کے لئے ترکی کے استنبول میں واقع سعودی قونصلیٹ گئے تھے لیکن وہ قونصلیٹ سے ہی لاپتہ ہوگئے تھے۔ بین الاقوامی دباو¿ کی وجہ سے کئی ہفتوں کے بعد سعودی عرب نے یہ قبول کیا کہ خاشقجی کو سعودی عرب میں قتل کردیا گیا تھا۔مختلف میڈیا رپورٹوں کے مطابق امریکہ کے مرکزی جانچ ایجنسی سی آئی اے کے پاس اس بات کے ثبوت ہیں کہ شہزاد محمد بن سلمان نے ہی خاشقجی کو قتل کرنے کا حکم دیا تھا۔

SHARE