عید الفطر کی آمد پر دیوبند کے بازاروں میں خریداروں کا زبردست ہجوم ،بڑھتی مہنگائی کااثر بے معنیٰ

10

عید الفطر کی دستک سے بازاروں میں دیر شب تک چہل پہل ، ماہ مقدس کے آخری ایام میں عبات و ریاضت میں بھی تیزی
دیوبند(ملت ٹائمز۔سمیر چودھری)
اقلیتی فرقہ کے قومی تیوہار عید الفطر کوآمد کو لیکر مسلمانوں کے چہروں پر خوشیوں کی لیکریں صاف طور پر نمایاں ہیں ،بازاروں میںخوب چہل پہل اور گہما گہمی نظر آرہی ہے، دکانوںپر پردہ نشیں خواتین کی زبرست بھیڑ دیکھنے کو مل رہی عید کی دستک سے جہاں بازاروں کی رونق میں اضافہ ہو گیا ہے وہیں خواتین دیر شب تک خریداری میں مصروف نظر آرہی ہیں ۔کپڑے ، جوتے چپل اورچوڑی کی دکانوں پر حجاب میں خواتین کا ہجوم ہے ۔خیال رہے کہ آج سے ماہ مبارک چند لمحے کاوقت باقی رہ گیا ہے ،جس سے روزہ داروں کی باقی بچے ایام میں عبادت میں تیزی آگئی ہے۔ وہیں عید الفطر کی خریداروں کے پیش نظر صبح جلدی کھلنے والی دکانیں رات تاخیر سے بند ہو رہی ہیں۔ فینسی سوٹ ، فیسنی چوڑیاں اور کپڑ ے و چپلوں کی دکانوں پر خاص طور پر خریدار وں کی بھیڑ زیادہ نظر آرہی ہے جسکی وجہ سے بازاروں کی رونق دو بالا ہوگئی ہے۔ سرسٹہ بازار ، اسلامیہ بازار ، دیوان دروازہ ، مینا بازار ، ریتی چوک اور دیگر مقامات پر دکانیں خریداروں کے سبب دیر تک کھلی رہتی ہیں اور عورتیں اپنے بچوں کیلئے من پسند کپڑے اور دیگر عید الفطر کی پسندیدہ ملبوسات خریدنے میں مشغول ہیں ۔ ادھر قرب و جوار سے آئے لوگ بھی ٹوپیاں ، خوشبو اور دیگر ضروری اشیاءکی دل کھول کر خریداری مسجد رشید کے باہر لگی دکانوں سے خریدنے میں مصروف نظر آرہے ہیں۔ رخصت پذیر رمضان المبارک کے آخری عشرہ میں جو جہنم سے نجات کا عشرہ ہے اسکو لے کر صائمین کی عبادت و ریاضت میں روز افزوں اضافہ ہوتا جارہا ہے، دیوبندکی تمام مساجد سینکڑوں معتکفین سے بھری پڑی ہے جس میں ہمہ وقت تلاوت قرآن کی صدائیں گونج رہی ہیں ۔ اس آخر ی اور بیش قیمتی ایام میں ہر فرد بشر کی یہی خواہش ہے کہ وہ اپنا اکثر و بیشتر حصہ خدا کی ربوبیت اور اس کی رضا جوئی میں صرف کرکے اپنا شمار نیک بندوں میں کرائے ، تاہم دن رات صائمین اور لوگوں کی چہل پہل سے یہاں کی نورانیت میں مزید اضافہ ہوتا جارہا ہے اور مقدس تیوہار عید کے پیش نظر بازار میں کافی بھیڑ نظر آرہی ہے ۔اس عالمی تیوہار کو لے کر بچوں کی خوشیاں قابل دید ہوتی ہیں ، تاہم ہر عام و خاص اپنی من پسند کی چیزیںجم کر خرید رہا ہے،جس سے آسمان چھوتی مہنگائی بے معنی ٰ نظر آرہی ہے ۔ وہیں عید کی تاریخ نزدیک آتے ہیں مین بازار ، صرافہ بازار، مینابازار، اسلامیہ بازار میں دوکانوں پر خواتین کا اژدہام نظر آرہا ہے ، اسلامیہ بازار ، دیوان بازار ، دارالعلوم چوک وغیرہ میں لوگ ٹوپیاں عطراور دیگر استعمال شدہ چیزوں کی خریداری کررہے ہیں جس سے یہاں کی رونق میں اضافہ ہورہا ہے۔