یو پی: بی جے پی کے لیے بری خبر، نشاد پارٹی نے این ڈی اے سے الگ ہونے کی دی دھمکی!

یو پی: بی جے پی کے لیے بری خبر، نشاد پارٹی نے این ڈی اے سے الگ ہونے کی دی دھمکی!

نشاد پارٹی کے سربراہ سنجے نشاد

نشاد پارٹی کے صدر سنجے نشاد نے بی جے پی کے قومی صدر جے پی نڈّا سے ملاقات کر کے یو پی اسمبلی الیکشن میں 72 سیٹوں کا مطالبہ کیا ہے، ایسا نہ ہونے پر این ڈی سے علیحدگی کی بات سنجے نشاد نے کہی ہے۔

اتر پردیش میں اسمبلی انتخابات 2022 میں ہونے ہیں، لیکن اس تعلق سے ہلچل ابھی سے بڑھی ہوئی ہے۔ لیڈروں کے ذریعہ پارٹی سے بغاوت اور دو پارٹیوں کے درمیان اتحاد کو لے کر ریاست میں کئی محاذ پر سرگرمیاں دیکھنے کو مل رہی ہیں۔ اس درمیان بی جے پی کے لیے بری خبر سامنے آ رہی ہے۔ دراصل این ڈی اے میں شامل نشاد پارٹی نے اپنے کچھ مطالبات کو لے کر دھمکی دیتے ہوئے کہا ہے کہ اگر بی جے پی ان پر غور نہیں کرتی تو پھر وہ این ڈی اے سے الگ ہو کر آئندہ اسمبلی انتخابات میں اپنی مرضی کے مطابق امیدوار اتاریں گے۔

دراصل نشاد پارٹی کے صدر سنجے نشاد نے بی جے پی کے قومی صدر جے پی نڈّا سے ملاقات کر کے اسمبلی کی 72 سیٹوں کا مطالبہ کیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ نڈّا نے ان کے مطالبہ پر غور کرنے کی بات کہی ہے اور پوری امید ہے کہ 72 سیٹیں انھیں مل جائیں گی کیونکہ اس پر نشاد پارٹی امیدوار کی جیت یقینی نظر آ رہی ہے۔ سنجے نشاد نے یہ بھی کہا کہ اتر پردیش میں 160 سیٹیں ایسی ہیں جہاں نشاد طبقہ سے تعلق رکھنے والے ووٹروں کی تعداد بہت زیادہ ہے، اور ان میں 70 سے زائد ایسی سیٹیں ہیں جہاں نشاد طبقہ اکثریت میں ہے۔

سنجے نشاد نے میڈیا سے بات چیت کے دوران کہا کہ اگر بی جے پی انھیں 72 اسمبلی سیٹوں پر امیدوار اتارنے کی اجازت نہیں دیتی تو وہ این ڈی اے سے الگ ہو کر اپنی مرضی کے مطابق امیدوار اسمبلی انتخاب میں اتاریں گے۔ ساتھ ہی انھوں نے یہ دعویٰ بھی کیا کہ اگر نشاد پارٹی اور نشاد سماج کو ناراض کر کے بی جے پی آگے بڑھے گی تو 2022 میں وہ برسراقتدار نہیں ہو سکے گی، نشاد طبقہ کو اپنے ساتھ جوڑ کر ہی بی جے پی الیکشن میں کامیاب ہو پائے گی۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *